رحیم یار خان میں زیر حراست ملزم کی ہلاکت کا واقعہ، وزیر اعلی کا جوڈیشل کمیشن بنانے کا فیصلہ،ڈی پی او رحیم یار خان کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

News Date: 
Thursday, September 5, 2019

لاہور5 ستمبر:وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدارنے رحیم یار خان میں زیر حراست ملزم صلاح الدین کی پولیس تشدد کے باعث جاں بحق ہونے کے واقعہ کی عدالتی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن مقرر کرنے کا فیصلہ کیا ہے - وزیر اعلی پنجاب کے احکامات پر عدالتی کمیشن کی تشکیل کے لئے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سے تحریری طور پر استدعا کر دی گئی ہے تا کہ غیر جانبدارانہ تحقیقات سے صلاح الدین کی موت کے حقائق منظر عام پر آسکیں - وزیر اعلی نے یہ فیصلہ افسوسناک واقعہ کے بارے میں پولیس تحقیقات میں نئے شواہد سامنے آنے کے بعد کیاہے - انہوں نے کہا کہ عدالتی کمیشن کے فیصلے سے عدل و انصاف کے تقاضے پورے ہوں گے اور واقعہ کے ذمہ داروں کو قانو ن کے کٹہرے میں لا کر قرار واقعی سزا دی جا سکے گی- انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی ہرگزاجازت نہیں - وزیر اعلی نے کہاکہ کسی بھی شخص سے غیر انسانی سلوک کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہاکہ پولیس حراست میں حالیہ ہلاکتوں کاسخت نوٹس لیا گیا ہے اور جوڈیشل انکوائری کی رپورٹ میں حقائق سامنے آنے پر قانون کے مطابق کاروائی ہو گی۔ دریں اثناء وزیر اعلی نے ڈی پی او رحیم یار خان کو عہدے سے ہٹاکراو ایس ڈی بنا نے کا حکم دیا ہے اور اس ضمن میں نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے -